25

پی ایس ایل فرنچائزز کو آمدنی میں سے حصے کا انتظار

پی ایس ایل فرنچائزز کو آمدنی میں سے حصے کا انتظار
ذکا اشرف کی واپسی کے بعد اونرز ملاقات کر کے تحفظات سے آگاہ کریں گے
کراچی: (ڈیلی اردو نیوز نیٹ ورک)پی ایس ایل فرنچائزز کو آمدنی میں سے حصے کا انتظار ہے جب کہ اب تک آٹھویں ایڈیشن کی 90 فیصد ادائیگی ہو جانا چاہیے تھی مگر ایسا نہ ہوا۔

پی ایس ایل کے آٹھویں ایڈیشن سے 5 ارب روپے سے زائد کی آمدنی ہوئی ہے،5 فیصد حصہ پی سی بی اور 95 فیصد 6 فرنچائزز کو ملے گا، سینٹرل پول کی غیرآڈٹ شدہ تفصیلات کے مطابق ایک ٹیم کے حصے میں 84 کروڑ سے زائد رقم آئے گی، ان میں سے اخراجات کی رقم منہا ہوگی جو 40 سے 55 فیصد تک ہو سکتی ہے۔
ٹی وی پروڈکشن کی 95فیصد رقم کی ادائیگی بھی فرنچائزز کے ذمے ہوتی ہے،معاہدے کے تحت 5 جولائی تک منافع میں سے 50 فیصد ادا کیا جانا تھا مگر تاحال اس حوالے سے کوئی اپ ڈیٹ نہیں دی گئی،اس سے قبل مئی میں 40 فیصد رقم واجب الادا تھی، اس کا پی سی بی نے فرنچائزز کوحساب بھیجا مگر کئی امور پراختلافات بھی سامنے آئے، آخری 10فیصد ادائیگی10 دسمبر تک کرنا ہوگی۔
یہ بھی پڑھیں: پی ایس ایل 8؛ پانچ ارب روپے سے زائد کی آمدنی

ذرائع نے بتایا کہ جمعرات کو فرنچائزز کے چیف فنانشل آفیسرز (سی ایف اوز ) کی میٹنگ طلب کر لی گئی جس میں کوئی پیش رفت متوقع ہے،لیگ کے معاملات سے فرنچائزز خوش نہیں ہیں، اونرز ذکا اشرف سے ملاقات میں تبادلہ خیال کرنا چاہتے ہیں، مینجمنٹ کمیٹی کے سربراہ ان دنوں آئی سی سی میٹنگز میں شرکت کیلیے جنوبی افریقہ میں موجود ہیں،ان کی وطن واپسی کے بعد ہی کوئی میٹنگ ہو سکے گی۔

یاد رہے کہ آٹھویں ایڈیشن کے فائنل میں لاہور قلندرز نے ملتان سلطانز کو زیر کر کے ٹرافی حاصل کی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں