289

وہ صوبہ جس نے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں سے کٹوتی کی سفارشات تیار کرلیں، تہلکہ خیز خبر

پشاور(ڈیلی اردو نیوز نیٹ ورک) خیبر پختونخوا حکومت نے مالی بحران کے باعث سرکاری ملازمین کی تنخواہوں سے 25 فیصد کٹوتی کرنے کے حوالے سے سفارشات تیار کرلی ہے۔
اس خبررساں ایجنسی نے میڈیا رپورٹس کے حوالے سے بتایاکہ ایک اعلی سطح اجلاس میں خیبر پختونخوا حکومت کو درپیش شدید مالی بحران کا جائزہ لیا گیا، صورتحال کے پیش نظر مختلف آپشنز پر غور کیا گیا اور صوبے کو ڈیفالٹ سے بچانے کیلئے سفارشات مرتب کی گئیں۔ صوبے کو درپیش مالی بحران کو کنٹرول کرنے کےلے تین آپشنز استعمال کیے جائیں گے۔ پہلے آپشن کے مطابق رواں مالی سال کے دوران بجٹ میں سرکاری ملازمین کے تنخواہوں میں دیا گیا 35 فیصد اضافہ واپس لیا جائے گا جس سے ماہانہ 9 ارب روپے کی بچت ہوگی۔
فنانس ڈیپارٹمنٹ دوسرے آپشن میں سرکاری ملازمین کے تنخواہوں سے 25 فیصد کٹوتی کرے گی جس سے ماہانہ 8ارب روپے کی بچت ہوگی۔ تیسرے آپشن میں صوبائی حکومت سرکاری ملازمین کو دی جانے والی ایگزیکٹیو الائونس، ہیلتھ پروفیشنل الائونس اور دیگر الائونسز کو ختم کرے گی جس سے صوبائی حکومت کو ماہانہ 2ارب روپے کی بچت ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں