124

ضلع خیبر: باڑہ کے تحصیل کمپاؤنڈ پر حملہ، دو خودکش بمبار مارے گئے

صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع خیبر میں باڑہ بازار کے تحصیل کمپاؤنڈ میں دو خود کش حملہ آوروں نے داخل ہونے کی کوشش کی، پولیس نے جوابی کارروائی کر کہ دونوں حملہ آوروں کو مار دیا ہے۔
خیبر پختونخوا کے آئی جی پولیس اختر حیات گنڈا پور نے اردو نیوز کو بتایا کہ جمعرات کو باڑہ بازار میں تحصیل کمپاؤنڈ پر دو خودکش حملے کیے گئے، ایک حملہ آور نے سامنے والے گیٹ جبکہ دوسرے نے عقب سے کمپاؤنڈ میں داخلے کی کوشش کی۔
آئی جی پولیس نے کہا کہ حملہ آوروں کو عمارت کے اندر داخل نہیں ہونے دیا گیا، پولیس کی جوابی فائرنگ میں دونوں خودکش حملہ آور مارے گئے ہیں۔
انہوں نے مزید بتایا کہ جوابی کارروائی میں ایک پولیس اہلکار ہلاک جبکہ سات زخمی ہوئے ہیں۔
آئی جی پولیس کا کہنا تھا کہ اینٹلی جنس ایجنسیوں کی جانب سے دہشت گردی کی اطلاعات تھیں جس کے بعد سکیورٹی اقدامات بڑھا دیے گئے تھے اور پولیس ہائی الرٹ پر تھی۔
آئی جی پولیس اختر حیات گنڈا پور نے کہا کہ دھماکہ بہت شدید تھا جس کے نتیجے میں عمارت کی ایک دیوار گر گئی ہے۔
عمارت کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے جبکہ زخمیوں کو حیات آباد میڈیکل کمپلیکس پشاور منتقل کر دیا گیا ہے۔
خیال رہے کہ دو دن قبل منگل کو پشاور میں فرنٹیئر کانسٹیبلری (ایف سی) کی گاڑی کے قریب خودکش دھماکہ ہوا تھا جس میں آٹھ افراد زخمی ہوئے تھے۔
یہ دھماکہ حیات آباد فیز 6 میں ہوا تھا۔
ایس پی کینٹ وقاص رفیق نے ایف سی کی گاڑی پر ہونے والے دھماکے کو خودکش قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ ’خودکش حملہ آور نے گاڑی کو نشانہ بنایا اور گاڑی سے ٹکرانے کے بعد خود کو دھماکے سے اُڑا دیا۔‘
انہوں نے مزید کہا تھا کہ ’ایف سی کی گاڑی فیز 6 میں واقع ایف سی ہیڈ کوارٹرز سے جا رہی تھی کہ اسے نشانہ بنایا گیا۔‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں